خبر اور تجزیہ

ان کے مفادات و فرمودات اور غلامانِ آقا صلی اللہ علیہ وسلم کا موقف

عاشقان ِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا عقیدہ ہے کہ ہمارے لیے کوئی آئین، قانون، ضابطہ، عدالت، پارلیمان، ریاست اور اس سے بالا ادارہ بھی حرمت رسول صلی اللہ علیہ وسلم سے محترم اور مقدم نہیں

توہینِ آئین ہو تو یہ غداری ہے اور غداری کی سزا موت ہے توہین عدالت گستاخی ہےاور اس گستاخی کی سزا  ۔صاحبان ِ ذوی العدل” کے نزدیک جیل ہے ۔ توہین ریاست ناقابل برداشت ہے کہ ریاست ایک مقدس بچھڑا ہے اور اس کی سزا دار و رسن اور صلیب و سلاسل ہے

ارکان ِ ایوانِ زیریں و ارکانِ ایوانِ بالا کی توہین مذموم ہے کہ یہ چوتھے آسماں کے مقدس فرشتے ہیں، قانون خانم ان کی توہین کے مرتکبین پر آتش زیر ِ پا ہو جائے تو یہ حسبِ قواعد و ضوابط ہوگا۔ قانون سے سرتابی سنگین جرم ہے کہ بالائی استحصالی طبقات کے مفادات کے تحفظ کے لیے بنایا گیا یہ قانون ایک مقدس دستاویز ہے

ستم ظریفی ملاحظہ کیجیے کہ عاشقان ِ رسالت مآب صلی اللہ علیہ و آلہ و اصحابہ و ازواجہ و بناتہ وسلم کو بعض مغرب گزیدہ اور امریکہ زدہ تجدد پسند بمع تشدد پسند سکالر ناصحِ مشفق بن کر یہ شوگر کوٹڈ زہریلا لیکچر دے رہے ہیں کہ توہینِ رسالت قابل عفو و در گزر حرکت ہے ، اسے “انسانیت” کے “وسیع تر مفاد میں” ٹھنڈے پیٹوں برداشت اور نظر انداز کرنا ہی “معراج انسانیت” ہے۔۔۔اور۔۔۔انسانیت ہی سب سے بڑا مذہب ہے لہذا محسنِ انسانیت صلی اللہ علیہ وسلم کی برملا اور مسلسل توہین پر آپ چپ رہیں۔۔۔ خاموش رہیں۔۔۔ منقار زیر پر رہیں۔۔۔سرمہ در گلو رہیں۔۔۔ اگر آپ اس پر احتجاج کریں گے تو یورپی یونین ناراض ہوجائے گی، جیسے وہ پہلے آپ سے بہت خوش ہے۔۔۔

یورپی یونین کی یہ دیوی اگر ناراض، برہم اور برافروختہ ہوگئی معیشت پر منفی اثرات پڑیں گے، جیسے پہلے معاشرے اور مملکت میں دودھ اور شہد کی نہریں بہ رہیں۔۔۔گھر گھر خوش حالی اور آسودگی کی چاندنی سے دروبام دمک رہے اور آنگن آنگن ہن برس رہا ہے۔۔۔گویا پاکستانی شہری ملکی معیشت کی بہتری اور امریکا و مغرب کی خوشنودی کے لیے مہر بہ لب اور صامت و ساکت رہیں۔

اس کے برعکس عاشقان ِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا عقیدہ ہے کہ ہمارے لیے کوئی آئین، قانون، ضابطہ، عدالت، پارلیمان، ریاست اور اس سے بالا ادارہ بھی حرمت رسول صلی اللہ علیہ وسلم سے محترم اور مقدم نہیں۔

سعداللہ شاہ نے اسی جانب اشارہ کرتے ہوئے کیا خوب کہا ہے
تخیل کی بلندی تک پھر انساں کی ہر اک پرواز ہوتی ہے
محبت جب محمد تک پہنچتی ہے تو سرافراز ہوتی ہے

توہین ِ رسالت مآب صلی اللہ علیہ وسلم پر ہم امتی کیوں مادام تساو کے بنائے ہوئے بے حس اور بے جان موم کے پتلوں اور آذران ِ وقت کے تراشیدہ پتھریلے مجسموں کی طرح ٹک ٹک دیدم، دم نہ کشیدم کی تصویر- بے بسی بنے رہیں۔ ہم ایسی کسی تہذیب وہذیب، تمدن شمدن اور برداشت عرضداشت اور ایسے کسی قومی و بین الاقوامی دستور کو۔۔۔صبح ِ بے نور کو، جہل کی بات کو، ظلم کی رات کو مانتے ہیں اور نہ جانتے ہیں۔

سوال یہ ہے کہ
کیا آئین، عدالت، ریاست، پارلیمان، حکومت اور نفاذ قانون کے ذمہ دار ادارے چھوئی موئی کے پودے ہیں کہ حب رسالت سے سرشار اس نعرے اور فرمان رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے لمس اور حرارت سے مرجھا کر رزق ِ خاک ہوجاتے ہیں۔ آئیے مل کر یہ فلک خراش نعرے لگائیں

لبیک لبیک یا رسول اللہ لبیک
تاجدار-ختم-نبوت: زندہ باد! زندہ باد،!!زندہ باد!!!
من سب نبیا، فاقتلوہ
گستاخ-رسول کی ایک ہی سزا
سر تن سے جدا، سر تن سے جدا

تحریر : حافظ شفیق الرحمن


قادیانیت کے بارے حقائق پر مبنی یہ کالم بھی پڑھیں

جاوید چوہدری کے قصیدہء قادیانی کے جواب میں


پاکستان کے نان ٹیکٹیکل ہتھیاروں کے بارے یہ آرٹیکل بھی پڑھیں

پاکستان کے ٹیکٹیکل ایٹمی ہتھیار حتف اور نصر بھارتی جارحیت کیلئے سڈن ڈیتھ

تازہ ترین کالم

احتجاج کا گورکھ دہندہ ! کیا جمہوری نظام میں پاکستان کی بقا ہے ؟

احتجاج ایک آرٹ ہے اور یہ آرٹ جمہوریت کی ناجائز اولاد...

قائد اعظم نیویارک اور موٹر وے۔ ڈاکٹر شکیل الرحمٰن فاروقی

اپنا اپنا انداز ہوتا ہے کہنے کا ورنہ ستمبر کی گیارہ...

رنگ میں بھنگ ۔ ڈاکٹر شکیل الرحمٰن فاروقی مرحوم

وفاقی وزیرِ سائنس اور ٹیکنالوجی فواد چوہدری کے مطابق ایک اہم...

Comments

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

چین نیوز

چین نے ہندوستان کیخلاف ڈیموں کے واٹر بم کی دھمکی دے دی

لداخ سیکٹر میں ہندوستان کو فوجی محاذ پر بدترین...

چین نے ہندوستان کیخلاف ہولناک مائیکرو ویو ہتھیار استعمال کیے

چین کی رینمن یونیورسٹی کے انٹرنشنل ریلیشن کے وائس...

ترکی نیوز

DEFENCE TIMES

Military Jobs and Defence News

GULF ASIA NEWS

News and facts from Gulf and Asia