خبر اور تجزیہ

دوبئی میں معاشی سرگرمیاں اور زندگی کی رونقیں بحال ہو رہی ہیں

دوبئی حکومت کی اعلی انتظامی صلاحیتوں ، بہترین معاشی پالیسیوں اور کامیاب حکمت عملی کی بدولت دوبئی کی معاشی سرگرمیاں بتدریج بحال ہو رہی ہیں

- Advertisement -
متحدہ عرب امارات کی بہترن قیادت کی اعلی منصوبہ بندی، کورونا بحران کے دوران دوبئی حکومت کی اعلی انتظامی صلاحیوں ، بہترین معاشی پالیسیوں اور کامیاب حکمت عملی کی بدولت دوبئی کی معاشی سرگرمیاں بتدریج بحال ہو رہی ہیں۔ تمام شعبوں میں کاروبار اور زندگی مسلسل رونقوں کی طرف لوٹ رہا ہے۔ کورونا بحران کے باوجود پچھلے مئی 2020 میں آئی ایچ ایس مارکیت دوبئی پرچیزنگ منیجرز کا اشاریہ 46 تک بڑھا اور قوی امید ہے کہ آنے والے دنوں میں تمام معاشی سرگرمیوں میں بہتری آئے گی۔
 
دوبئی کی معاشی ڈیویلپمنٹ کا احوال جاننے کیلیے خریداری منیجرز کے سروے کو سے پتہ چلتا ہے کہ کورونا وائرس کیخلاف کامیاب حکمت عملی کی وجہ سے پابندیوں میں نرمی کے بعد دوبئی کی معیشت پھر سے ترقی کی سمت رواں ہے۔
 

متحدہ عرب امارات کی ترقی میں مین کردار کے حامل یو اے ای سینٹرل بنک کے مطابق سال رواں کے آخری چھ ماہ کے دوران معاشی سرگرمیاں بہتر انداز میں بحال ہونا شروع ہوں گی۔ اور اگلے برس ترقی کا عمل تیز تر رفتار ہو گا

یو اے ای سینٹرل بنک نے سال 2020 کے دوسرے کوارٹر کا معاشی جائزہ پیش کیا ہے۔ اس حوالے سے اس بات کا یقین ظاہر کیا گیا ہے کہ اس کی طرف سے ٹارگٹڈ اکنامک سپورٹ سکیم، مقامی بنکوں اور وفاقی و مقامی حکومتوں کی طرف سے جاری کردہ اقتصادی تحریک پیکجز کی وجہ سے پی ایم آئی ، رئیل اسٹیٹ کی قیمتوں، ملازمت، لونز اور پیداوار پر مثبت اثرات مرتب ہونے کی توقع ہے۔
 

مرکزی بینک کے ذرائع کے مطابق اوپیک پلس معاہدہ کے حوالے سے اس سال 2020 کے دوران متحدہ عرب امارات کی ایوریج یومیہ تیل پیداوار 29 لاکھ 84 ہزار بیرل رہے گی۔

مرکزی بینک کی رپورٹ کے سالانہ تقابلی جائزہ کے مطابق پہلی سہہ ماہی میں لیبر مارکیٹ نے پرائیویٹ سیکٹر پرمٹ ہولڈرز ملازمت میں 3ء1 فیصد اور 2 فیصد ترقی ہوئی ہے۔ جبکہ رواں سال کے پہلے تین ماہ میں ملازمتوں کی تعداد 51 لاکھ 59 ہزار ہوگئی ۔ مرکزی بینک کے مطابق اس عرصہ میں 64 ہزار نئی ملازمتیں پیدا ہوئیں
سال 2019 میں نجی شعبہ کی ملازمتیں نان آئل جی ڈی پی میں بڑھیں تھیں ۔ جبکہ اس سال 2020 کی پہلی سہہ ماہی میں رئیل اسٹیٹ اور بزنس سروسز سیکٹر میں یہ ترقی 3ء6 فیصد اور 5ء10 فیصد رہی تھی ۔ مینوفکچرنگ سیکٹر میں بھی گزشتہ سال کی شرح کے برابر 3ء1 فیصد ترقی ریکارڈ کی گئی ہے۔ نجی شعبہ میں سب سے کم تناسب والے شعبوں یعنی ٹرانسپورٹ ، سٹوریج اور کمیونیکیشنز سیکٹر نے 9ء6 فیصد ترقی کی ہے۔
 
- Advertisement -

تازہ ترین خبریں

Comments

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

تازہ ترین