خبر اور تجزیہ

امارات سے تاریخی مذاکرات کے بعد اسرائیل فلسطینی علاقوں میں مزید قبضہ نہیں کرے گا

متحدہ عرب امارات کو یقین ہے کہ اس سفارتی پیش رفت کے نتیجے میں صدر ٹرمپ کی درخواست اور متحدہ عرب امارات کی حمایت سے، اسرائیل فلسطین کے علاقوں پر خودمختاری کے اعلان کو معطل کردے گا

- Advertisement -
دوبئی کے حکمران جناب شیخ محمد نے ٹویٹ پر اعلان کیا ہے کہ اسرائیل فلسطینی علاقوں میں مزید قبضہ روکنے پر راضی ہوگیا ہے۔ صدر ٹرمپ اور وزیراعظم نیتن یاہو کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران، فلسطینی علاقوں میں مزید اسرائیلی اتحاد کو روکنے کے لئے ایک معاہدہ طے پایا ہے۔ متحدہ عرب امارات اور اسرائیل نے باہمی تعلقات کے قیام کے لئے تعاون اور ایک روڈ میپ طے کرنے پر بھی اتفاق کیا ہے۔”
 

اسرائیل فلسطینی علاقوں میں مزید قبضہ نہیں کرے گا

 
یہ تاریخی سفارتی اقدام مشرق وسطی کے خطے میں امن کو آگے بڑھاۓ گا اور یہ تینوں رہنماؤں کی جرت مندانہ سفارت کاری اور ویژن اور متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کی ہمت کا ایک ایسا راستہ ہے جس سے ایک نیا راستہ طے کیا جائے گا جو خطے میں بڑی صلاحیت کو کھول دے گا۔

امارات سے تاریخی مذاکرات کے بعد اسرائیل فلسطینی علاقوں میں مزید قبضہ نہیں کرے گا ۔۔ تینوں ممالک کو بہت سے مشترکہ چیلنجز کا سامنا ہے اور آج کے تاریخی کارنامے سے باہمی فائدہ اٹھایا جائے گا۔

 

اسرائیل اور امارات کے وفود باہمی معاہدوں پر دستخط کریں گے

 
اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے وفود آئندہ ہفتوں میں باہمی معاہدوں پر دستخط کریں گے جس کے تحت باہمی معاہدوں پر دستخط کریں گے، جس کے تحت باہمی مفادات کے باہمی معاہدوں پر دستخط ہوں گے۔
 
توقع ہے کہ مشرق وسطی کے دو متحرک معاشروں اور ترقی یافتہ معیشتوں میں سے دو کے مابین براہ راست تعلقات معاشی نمو کو فروغ دینے، تکنیکی جدت طرازی کو بڑھاوا دینے، اور لوگوں سے عوام کے قریبی تعلقات کو مضبوط بنانے کے ذریعہ اس خطے میں تبدیلی لائیں گے۔

اسرائیل علاقے پر خودمختاری کے اعلان کو معطل کردے گا

 
اس سفارتی پیش رفت کے نتیجے میں صدر ٹرمپ کی درخواست اور متحدہ عرب امارات کی حمایت سے، اسرائیل فلسطین کے علاقوں پر خودمختاری کے اعلان کو معطل کردے گا، اور اب عرب اور مسلم دنیا کے دیگر ممالک کے ساتھ تعلقات کو وسعت دینے پر کام کرے گا۔
 
امریکہ، اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کو یقین ہے کہ دیگر ممالک کے ساتھ اضافی سفارتی کامیابیاں ممکن ہیں، اور اس مقصد کے حصول کے لئے مل کر کام کریں گے۔
 
- Advertisement -

تازہ ترین خبریں

Comments

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

تازہ ترین